مچھر کا باپ بھی پھر گھر میں داخل نہیں ہو سکتا

آج ہم ایک الگ اور دلچسپ موضوع لے کر آئے ہیں جو اپنی نوعیت کا ایک بہت ہی خاص موضوع ہے منفرد موضوع ہے ۔ جس کا نام ہے مچھر۔ آپ آج میں یہ جا نیں گے کہ مچھر کیا ہے۔ مچھر کے کیا کیا کر توت ہیں اور مچھر سے بچنے کے لیے کیا گھر یلو ٹوٹکے استعمال کیے جا سکتے ہیں ۔ ہمیشہ سے یہ کوشش رہی ہے کہ ہم آپ تک روزمرہ زندگی سے منسلک مختلف موضوعات کے حوالے سے قرآن وحدیث کی روشنی میں آپ کو معلو مات سے آگاہ کر تے رہیں یہ معلو مات نہ صرف آپ کی معلو مات میں اضافہ کر تی ہیں بلکہ آپ کو اسلامی تعلیمات او ر سا ئنسی تحقیقات سے روشنا س کرواتی ہیں لیکن آج ہم آپ کے لیے ایک ایسا مضمون لے کر آ ئے ہیں جو گھر یلو ٹوٹکوں سے متعلق ہے یعنی ایسے کو ن سے گھر یلو ٹوٹکے ہیں جو مچھر سے ہماری جان بخشی کروا سکتے ہیں اپنے موضوع کی طرف آنے سے پہلے آپ سے گزارش کی جاتی ہے کہ میری ان تمام باتوں کو بہت ہی زیادہ غور سے سنیے گا تا کہ مچھر سے متعلق بہت سی معلو مات آپ کو حاصل ہو سکیں۔

ہم بات کر رہے تھے مچھر کو بھگانے کے لیے کیا گھریلو ٹوٹکے استعمال کیے جا سکتے ہیں تا کہ ہم گر میوں میں ہم سکون سے رہ سکیں ہم آپ کو بہت سے مفید ٹوٹکے بتا ئیں گے لیکن آپ سے گزارش ہےکہ ہماری باتوں کو غور سے سنیے گا ۔ اپنے موضوع کی طرف آنے سے پہلے ہم آپ کو یہ بتاتے چلیں کہ مچھر ہو تے کیا ہیں آپ یہ جان کر حیران ہوں گے کہ دنیا بھر میں ان کی تین ہزار پانچ سو اقسام پائی جاتی ہیں مچھر کی زندگی چار مراحل پر مشتمل ہوتی ہے انڈا لاروا پیوپا اور مکمل مچھر ان کی افزائش عموماً تا لا بوں نالیوں یا پانی کے کسی بھی ذخیرے اور پودوں کے پتوں پر ہوتی ہے ان کی زندگی کے پہلے تین مرحلے ایک سے دو ہفتے میں مکمل ہو جاتے ہیں مادہ مچھر ایک ماہ تک زندہ رہ سکتی ہے مگر عام طور پر اس کی زندگی ایک سے دو ہفتے تک ہوتی ہے۔

ان کی افزائش اور زندگی میں ماحول کو خاص اہمیت حاصل ہے مچھر ایک انتہائی گندا جانور ہے۔ جس کا کام گند اور کوڑا کرکٹ پر بیٹھنا اور بیماریاں پھیلا نا ہے ۔ مچھر ملیر یا ڈینگی اور دوسری بیماریاں پھیلانے میں پیش پیش ہے۔ کیا آپ کو معلوم ہے؟؟؟ کہ مچھر دنیا کا سب سے خطرناک جاندار ہے اور یہ دعوہٰ عالمی ادارہ صحت کا ہے جس کی وجہ یہ ہے کہ مچھر کی بد ولت ملیر یا ڈینگی اور اب مختلف مما لک میں زیکا وائرس جیسے امراض پھیل رہے ہیں جس کے نیتجے میں ہر سال دس لاکھ سے زائد اموات ہوتی ہیں۔ آپ یہ بات اچھی طرح جانتے ہیں کہ گر میوں کے موسم میں رات کو اگر لوڈ شیڈ نگ ہو رہی ہو تو پنکھے نہ چلنے کی وجہ سے یہ مچھر بہت ہی تنگ کر تے ہیں۔ نیم کے تیل کو ناریل کے خالص تیل میں یکساں مقدار میں ملا ئیں اور اپنے جسم کے کھلے حصوں پر لگا دیں۔

اس کی تیز بو مچھروں کو کم از کم آٹھ گھنٹوں تک مجبور کر دے گی۔ پودینہ جو کہ عام طور پر دستیاب ہو تا ہے۔ اس کو بھی آپ مچھروں کے خلاف استعمال کر سکتے ہیں کاٹنے والے کیڑوں کو پو دینے کی مہک پسند نہیں ہوتی لہٰذا آپ پودینے کے پتوں کو پس کر اپنی جلد پر مل لیں تو مچھروں کو دور رکھ سکتے ہیں اسی طرح اگر مچھر کاٹ لیں تو ان مچھروں کے کاٹنے پر خارش پر قابو پا یا جا سکتا ہے۔ یہ کچھ ٹوٹکے تھے جو ہم نے آپ کو بتائے ہیں ان ٹوٹکوں پر استعمال کر کے ان بیماریوں سے بچا جا سکتا ہے جو کہ مچھر اپنے ساتھ لے کر آتے ہیں۔

About soban

Check Also

”زندگی میں اگر خوشی چاہیے تو تین با تیں اپنے ساتھ باندھ لو او ر غم کو ہمیشہ کے لیے نکال دو۔“

اچھی کتابیں اور سچے لوگ ہر کسی کو سمجھ نہیں آتے! دنیا میں کوئی نہ …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *