”پیشاب کی تمام تکلیف کا علاج“

پیشاب کی تکلیف ایک عام سا مسئلہ ہے ۔ یو ں تو یہ کسی کو بھی ہو سکتا ہے لیکن درمیا نی عمر کے لوگوں کو اس کا مسئلہ زیادہ در پیش ہوتا ہے۔ جبکہ کچھ لوگوں کو بڑھا پے میں پیشاب پر کنٹرول ہی ختم ہو جاتا ہے۔پیشاب میں انفیکشن گردوں، مثانے ، پیشاب کی نالی کے نظام کے کسی حصے میں انفیکشن ہونے کی صورت میں ہوتا ہے۔ مردوں کےمقابلے میں خواتین کو یہ مسائل زیاد ہ ہو تے ہیں۔ مثا نے تک محدو د انفیکشن تکلیف دہ تو ہو تا ہے لیکن اتنا خطر ناک نہیں ہوتا

تاہم اگر یہ انفیکشن بڑھ کر گردوں تک پہنچ جائے تو مسائل کا سامنا کر نا پڑتا ہے۔ لیکن اگر آپ اس انفیکشن کو شروع سے ہی پکڑ لیں تو بڑے مسائل سے بچا جا سکتا ہے ۔علامات پیشاب میں انفیکشن کی علامات بعض دفعہ ظاہر نہیں ہوتیں۔ لیکن اس انفیکشن کی ممکنہ علامات ہو تی ہیں جن کو نظر انداز نہیں کیا جاسکتا۔پیشاب باربار محسوس ہونا لیکن رک رک کر آنا ،پیشاب کی رنگت کا بدلنا جیسے زرد ، گلابی یا سر خ، خ و ن کا آنا،پیشاب میں درد، جلن یا بد بو کا ہونا

گر دوں کی سو زش،تیز بخار، متلی قے اور سردی بھی بڑی اس کی علامات میں سے ایک ہے۔وجو ہا ت:عام طور پر یہ انفیکشن بیکٹیریا کی وجہ سے ہوتا ہے۔ بیکٹیر یا پیشا ب کی نالی کے ذریعے جسم کے اندر داخل ہوتے ہیں اور مثا نے میں جا کر پھیل جاتے ہیں۔ یہ جسم میں تیز ی کے ساتھ پھیلتے ہیں۔ اس کے بعد یہ پیشاب کی نالی میں انفیکشن پھیلانے کے لیے تیار ہو جاتے ہیں۔اگرچہ پیشاب کا نظام اس طر ح بنا ہے کہ ان چھوٹے حملہ آور جر اثیمو ں سے بچ سکتا ہے

لیکن یہ دفاعی نظا م بعض اوقات کام نہیں کرتا اور جراثیم افز ائش میں کامیاب ہو جاتے ہیں۔ ان سے بچاؤ کے لیے ضرور ی ہے کہ آپ درج ذیل نسخو ں پر عمل کر یں۔پانی زیادہ سے زیادہ پئیں, اور یہ دواءسفوف مقوی مثانہ اجزاء گوکھرو، سنگھاڑا اور مصر ی پچا س پچا س گرام ہم وزن لے کر ملا کر باریک پاؤڈر بنالیں اور خوراک صبح شام ایک چمچ پانی کے ساتھ لیں۔سبز الا ئچی کا قہو ہ دن میں ایک با ر استعمال کر یں۔دو انجیر نہارمنہ کھانے سے مثانے کے مسئلے سے نجات ملتی ہے۔

اگر پیشا ب میں جلن ہو تو چھٹانک پیاز کاٹ کر آدھی سیر پانی میں جو ش دے لیں۔ جب پاؤ بھر باقی رہ جائے تو چھان کر ٹھنڈ ا کر لیں۔ اس کے پینے سے جلن دور ہو جائے گی۔ناشپاتی پیشاب کی جلن کو دور کر تی ہے۔ اگر پیشاب رک رک کر آتا ہو یا اس کی رنگت بدلی ہو تو خربو زے، تربو ز اور گر ما کے استعمال سے ٹھیک ہو جاتا ہے۔ مو لی میں پیشاب کی تمام تر بیماریو ں کا علاج ہے کیو نکہ یہ جگر اور مثانے کی گر می کو ختم کر تی ہے۔ کھجو ر کھانے سے پیشاب کی جلن میں افاقہ ہو تا ہے۔

اگر پیشاب کی نالی میں خر اش اور زخم ہو جائے، پیپ آنے لگے یا سوزاک ہو نے لگے توایک گڑ ھل کا پھو ل ایک بتاشے کے ساتھ کو ٹ لیں اور نہار منہ کھا کر اس کے ساتھ دہی کی لسی یا گنے کا رس پی لیں ۔ دوسرے دن دو پھو ل اور دو بتاشے لے کر پہلے دن کی طر ح کھائیں۔ یہ عمل پانچ دن کریں پھر چھٹے روز سے ایک پھو ل اور ایک بتاشہ کم کر تے جائیں تو دس دن میں فر ق پڑ جائے گا۔ پتھر ی کی وجہ سے اگر پیشاب رک رک کر آتا ہو تو انگور کھائیں کیو نکہ انگور پیشاب آور ہے۔

دو چمچ انڈوں کی سفید ی ، ایک چمچ زیتو ن کے تیل میں ملا کرمکس کر لیں اور صبح نہار منہ ایک کپ نیم گر م دو دھ میں ڈال کر پی لیں۔ چند دن کے عمل سے پیشاب کی جلن اور سو زش دور ہو جائے گی۔ اگر پیشاب کے ساتھ خ و ن آتا ہو تو پھٹکر ی بریاں تین ماشہ باریک پیس کر تین برابر پڑیاں بنا لیں اور صبح شام دو دھ کی لسی کے ساتھ استعمال کر یں خ و ن آنا بند ہو جائے گا ۔

About soban

Check Also

”زندگی میں اگر خوشی چاہیے تو تین با تیں اپنے ساتھ باندھ لو او ر غم کو ہمیشہ کے لیے نکال دو۔“

اچھی کتابیں اور سچے لوگ ہر کسی کو سمجھ نہیں آتے! دنیا میں کوئی نہ …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *