بینگن کے فوائد بلغم ،قبض اور معدے کا علاج

بینگن کو دنیا بھر میں آلو، اروی، گوشت وغیرہ کے ہمراہ یا سادہ پکا کر کھایا جاتا ہے۔ یہ سبزی تمام سال دستیاب ہوتی ہے۔ اس کی دو قسمیں ہوتی ہیں۔ یعنی گول اور لمبی۔ بڑے بینگن کی نسبت چھوٹے بینگن لذیذ اور اچھے ہوا کرتے ہیں۔بینگن میں فاسفورس، فولاد، وٹامن اے، بی اور سی ہوتے ہیں۔ اس کا مزاج گرم خشک ہوتا ہے۔ بہر حال اس کو گھی، مرچ اور گرم مصالحہ کے بغیر ہرگز استعمال نہیں کرنا چاہیے۔ اس کا ذائقہ پھیکا ہوتا ہے جب کہ اس کی مقدار خوراک دو چھٹانک تک ہے۔خوراکی ریشہ، حیاتین بی1،بی 6، پوٹاشیم، میگنیشیم اور فولک ایسڈ کے علاوہ یہ سبزی ایسے مقوی عناصر سے بھرپور ہے جو کہ بلند فشار خون اور تناؤ میں کمی اور زیابیطس کے مرض کو قابو میں کرنے میں مددگار ہیں۔ یہ بھی دل چسپ ہے کہ ایکبینگن میں ایک سگریٹ جتنا نکوٹین پایا جاتا ہے۔

ایک تحقیق کے مطابق بینگن انسانی معدے کو طاقت دینے کے ساتھ ساتھ بھوک میں بھی اضافہ کرتا ہے جسے گیس اور تیزابیت کے مریض بطور قبض کشا دوا کے استعمال کرسکتے ہیں۔اس کے ساتھ ساتھ یہ انسانی جلد کے لیےبھی انتہائی مفیدسبزی ہے۔بینگن میں ایسے قدرتی اجزا بھی کثرت سے پائے جاتے ہیں جو کینسر جیسے موذی امراض سے محفوظ رکھنے میں نہایت مدد گار ثابت ہوتے ہیں۔ صرف یہی نہیں بلکہ اس بیش فائدہ سبزی میں موجود پوٹاشیم دل کو تقویت بخشتا ہے جب کہ بینگن حافظہ کی کمزوری کو دور کرتے ہوئے دیگر کئی بیماریوں کے خلاف قوتِ مدافعت میں بھی اضافہ کرتا ہے ۔بینگن قبض کشا ہے۔ معدہ میں گیس اور تبخیر ہو تو اسے کھانے سے دست آئیں گے جو بے حد فائدہ بخش عمل ہے۔اس کے ساتھ ساتھ یہ بھوک لگاتا ہے اور معدے کی رطوبتوں کے اخراج میں مدددیتا ہے۔

چوٹ کا درد خواہ کیسا کیوں نہ ہو بالخصوص جوڑ میں درد ہو اور سبب اس کا انجماد ہو تو خون تحلیل کرنے اور ایسے درد کو دور کرنے میں زود اثر ہے۔ اس کا طریقہ استعمال یوں ہوگا کہ بینگن کے دو ٹکڑے کرکے توے پر سینک کر اور پسی ہوئی ہلدی تین ماشے دونوں ٹکڑوں پر مل کر گرم گرم باندھیں تو بہت جلد شفا ہو گی۔بینگن موچ نکالنے اور ورم دور کرنے میں اپنا ثانی نہیں رکھتا۔ بینگن کے چھوٹے چھوٹے قتلے کر کے اور نمک آٹھواں حصہ ملا کر کسی کڑاہی میں گرم کیجیے۔ جب قتلے ملائم ہو جائیں تو نیم گرم موچ پر باندھ دیں، چند بار کے عمل سے موچ نکل جائے گیاور ورمبھی جاتا رہے گا۔بلغمی مزاج والوں کے لیےبینگن کا سالن زیادہ مفید غذا ہے کیوں کہ بینگن بلغم کا دشمن ہوتا ہے اور اسے کھانے سے بلغم ختم ہو جاتی ہے۔بینگن کا سالن دل کو بھی تقویت دیتا ہے۔اگرآپ کے ہاتھ پاؤں سے پسینہآتا ہو، توبینگن سے نکلا ہوا پانی ہاتھوں پر لگانے سے پسینارک جائے گا، مجرب ہے۔بینگن پیشاب آور ہے اور اس کا زیادہ استعمال خونمیں گرمی پیدا کرتا ہے۔اسی طرح جن لوگوں کو جسم میں خشکی ہو، نیند کم آتی ہو اور بواسیر کی شکایت ہو انھیں بینگن ہرگز نہیں کھانا چاہیے۔ بینگن کا استعمال ہر قسم کے بخار میںبھی سختی سے منع ہے۔

About soban

Check Also

”زندگی میں اگر خوشی چاہیے تو تین با تیں اپنے ساتھ باندھ لو او ر غم کو ہمیشہ کے لیے نکال دو۔“

اچھی کتابیں اور سچے لوگ ہر کسی کو سمجھ نہیں آتے! دنیا میں کوئی نہ …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *