”ظالم انسان کے شر سے بچنے کے لئے مجرب وظیفہ“

مظلوم اور شریف کمزور ہونے کے باعث اپنا حق مانگنے سے بھی عاجز آجاتا ہے اور اس لئے یہ کمزوری مستقل اس کے گلے پڑ جاتی ہے ۔روحانی طور پر کمزور انسان ہی زیادہ تر مظلومیت کا شکار ہوتے ہیں طاقت وقت و جرات جسموں میں ہوتی ہے لیکن اس سے کہیں زیادہ روح میں ہوتی ہے جو انسان اپنی روح کی غذا کا بندو بست کرتا ہے وہ ارفع ہوجاتا ہے اس تحریر میں مظلوم انسانوں کے لئے طاقتور وظیفہ پیش کیاجارہا ہے

جو ان کی ڈھال بن جائے گا یہ نہایت مجرب وظیفہ ہے روحانی طور پر کمزور اور دنیاوی ترقی کے خواہشمند اسے پڑھیں تو ان کی مرادیں پوری ہوجائیں گی اللہ رب العالمین کے اسم مبارکہ یارافع میں ایسی تاثیر ہے کہ کوئی بھی مظلوم اس کو اپنی ڈھال بنا سکتا ہے جو شخص مطلوم ہو اور اسے یہ بھی معلوم ہو کہ ظالم اس سے طاقت ور ہے اور اس پر ظلم کرنے پر آمادہ ہے تو اسے چاہئے کہ اس اسم مبارک یا رافع کو گیارہ سو مرتبہ روزانہ اول و آخر گیارہ مرتبہ درود ابراہیمی کے ساتھ گیارہ دن تک پڑھے روزانہ پڑھنے کے بعد سجدے میں جا کر اللہ تعالیٰ کے حضور ظالم سے اس کی پناہ مانگے ظالم زیر ہوجائے گا۔

اگر کسی ملازم کی عہدے کی ترقی رک چکی ہو اور کسی بھی وجہ سے اس کے افسران رکاوٹیں ڈال رہے ہوں تو ملازم کو چاہئے کہ پیر کے دن بعد نماز مغرب سات سو سات مرتبہ اسم مبارک یا رافع پڑھے اور یہ عمل گیارہ دن تک جاری رکھے اس کے بعد تھوڑا وقفہ لے اور دوبارہ پیر آنے پر یہی عمل کرے پھر وقفہ کرے اور تیسرے پیر کو بھی یہ عمل کرے اور اس کے بعد اللہ تعالیٰ کے حضور جھولی پھیلا کر اپنی ملازمت میں ترقی کے لئے دعا کرے اس میں کوئی شک نہیں کہ حق تعالی اسے ترقی عطافرمائیں گے۔

عمل شروع کرنے سے پہلے اول و آخر گیارہ گیارہ مرتبہ درود ابراہیمی پڑھنا لازمی ہے اللہ پاک ہم سب کو ظالم کے شر سے محفوظ رکھے۔فرض نمازوں کا اہتمام کریں، فجر اور مغرب کی نماز کے بعد بسم اللہ کے ساتھ گیارہ مرتبہ سورۃ قریش پڑھ لیا کریں، اول و آخر درود شریف بھی پڑھ لیں، ان شاء اللہ ہر شریر کے شر سے جان مال کی حفاظت ہو گی۔ حدیثِ پاک میں ہے کہ رسول اللہ ﷺ کو جب کسی دشمن کا اندیشہ ہوتا تھا تو آپ ﷺ ’’اَللّٰهُمَّ إِنَّا نَجْعَلُكَ فِيْ نُحُوْرِهِمْ وَنَعُوْذُبِکَ مِنْ شُرُوْرِهِمْ‘‘ پڑھا کرتے تھے۔

اسی طرح صبح و شام درج ذیل دعائیں ایک ایک مرتبہ پڑھنے کا اہتمام کریں:أَعُوْذُ بِوَجْهِ اللهِ الْعَظِیْمِ الَّذِيْ لَیْسَ شَيْءٌ أَعْظَمَ مِنْهُ وَبِکَلِمَاتِ اللهِ التَّامَّةِ الَّتِيْ لَایُجَاوِزُهُنَّ بَرٌّ وَلَافَاجِرٌ، وَبِأَسْمَآءِ اللهِ الْحُسْنیٰ کُلِّهَا مَاعَلِمْتُ مِنْهَا وَمَالَمْ أَعْلَمْ مِنْ شَرِّ مَا خَلَقَ وَبَرَأَ وَذَرَأَ۔أَعُوْذُ بِوَجْهِ اللهِ الْکَرِیْمِ وَبِکَلِمَاتِ اللهِ التَّامَّةِ اللَّاتِيْ لَایُجَاوِزُهُنَّ بَرٌّ وَلَافَاجِرٌ مِنْ شَرِّ مَایَنْزِلُ مِنَ السَّمَآءِ وَمِنْ شَرِّ مَا یَعْرُجُ فِیْهَا، وَشَرِ مَا ذَرَأَ فِي الْأَرْضِ وَشَرِّ مَا یَخْرُجُ مِنْهَا، وَمِنْ فِتَنِ اللَّیْلِ وَالنَّهَارِ وَمِنْ طَوَارِقِ اللَّیْلِ وَالنَّهَارِ إِلَّا طَارِقًا یَطْرُقُ بِخَیْرٍ یَارَحْمٰن‘‘.

About soban

Check Also

”زندگی میں اگر خوشی چاہیے تو تین با تیں اپنے ساتھ باندھ لو او ر غم کو ہمیشہ کے لیے نکال دو۔“

اچھی کتابیں اور سچے لوگ ہر کسی کو سمجھ نہیں آتے! دنیا میں کوئی نہ …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *