خشکی اور سکری یہ دو چیزیں لگا ئیں۔ دوبارہ ہو ئی تو کہنا۔

اللہ تعالیٰ کی بنائی ہوئی ہر چیز اپنے مقصد ،کار کردگی،موزونیت اور حسن کے لحاظ سے حیرت انگیز ہے اور تمام مخلوقات میں انسان کے لئے کہا گیا ہے کہ اسے سب سے اچھی تقویم پر بنایا گیا ہے اور اسی وجہ سے اشرف المخلوقات کے خطاب سے نوازا گیا ہے۔اگر ہم انسانی جسم کے ظاہری خدوخال کا بغور جائزہ لیں تو معلوم ہو گا کہ ہر چیز اور حصہ نہ صرف اپنے کام کے لحاظ سے نہایت مہارت سے بنایا گیا ہے بلکہ اس کی بناوٹ کے ساتھ ساتھ جس مقام پر اسے رکھاگیا ہے وہی اس کی کار کردگی اور حسن کو مد نظر رکھتے ہوئے بہترین ہےدنیا کا ماہر سے ماہر مصور بھی اس ترتیب میں فرق لا کر انسانی جسم کے حسن میں اضافہ نہیں کر سکتا۔یعنی وہ آنکھ کسی اور جگہ لے جانا چاہے اور بال اور ناخن کسی جدا مقام پر رکھنا چاہے تو صورت بگڑ سکتی ہے ،بن نہیں سکتی

۔پھر ان حصوں کا پوری تندرستی کیساتھ موجود ہونا اورکام کرتے رہنا،زندگی کے مقاصد پورے کرتا ہے اور دیدہ زیبی اور خوبصورتی قائم رکھتاہے۔ جسم کے ان ظاہری حصوں میں سر کے بال بھی جسمانی حسن میں اضافہ کا باعث بنتے ہیں اور ایک نہایت قیمتی چیز سمجھتے جاتے ہیں۔ان کی اصل قیمت کا اندازہ اس وقت ہوتاہے جبکہ بادل چھٹ کر چاند نظر آنے لگے یا سیاہ بادلوں میں سفید بجلی چمکناشروع ہو جائے۔اس وقت انسان چاہتا ہے کہ اپنا سب کچھ قربان کر دے تاکہ اس کے بال قائم رہیں۔چونکہ جو بال گر جائے یا سفید ہو جائے اسے دوبارہ پیدا کرنا یا قدرتی طور پر سیاہ کرنا سائنس کی تمام ترقی کے باوجود ابھی تک ممکن نہیں ہو سکا ہے۔ بالوں میں بہت سے امراض پیدا ہوتے ہیں۔کبھی وہ باریک وپتلے ہو جاتے ہیں۔کبھی خشک ہو کر پھٹنے لگتے ہیں اور دو منہ ہو جاتے ہیں۔کبھی خشک ہو کر پھٹنے لگتے ہیں

اور دومنہ ہو جاتے ہیں ۔کبھی رنگت بھدی وپھیکی پڑجاتی ہے یا با لکل سفیدہو جاتے ہیں اور کبھی گرنے لگتے ہیں ۔سر کی ے اور آدھ گھنٹہ بعد پانی سے دھولیا جائے۔اس کے علاوہ بالوں میں روغن گل یا خالص روغن چنبیلی لگانا بھی مفیدہے۔اگر بفابہت زیادہ ہوتو5تولہ روغن گل ایک تولہ روغن کمیلہ ملا کر لگانے کا مشورہ دیتے ہیں یا دوائے خارش جدید 3ماشہ،5تولہ تیل میں ملا کر لگاتے ہیں ۔ یہ بھی بفا کو دور کرنے میں کار آمد ہے ۔روغن گل میں ہی برابر وزن کا سرکہ ملا کر چند روز لگا یا جائے اور پھر سادہ روغن گل استعمال کیا جائے تب بھی مفید ثابت ہوتاہے۔ بفا ایک وقت سے دور ہونے والی ذہن کو کوفت دینے والی چیز ہے لیکن اسے پریشان و متفکر نہیں ہونا چاہئے کیونکہ تفکرات سے بھی بال گرتے ہیں اور کمزور ہو جاتے ہیں۔پورے پروگرام پر صبر آزما طریقہ پر عمل کرکے اس سے کلی طور پر چھٹکارا حاصل کیا جا سکتا ہے،لیکن پوری طرح سے بفا کے دور ہونے کے بعد بھی کبھی کبھی بالوں کا تفصیلی جائزہ لیتے رہنا چاہیے کہ کہیں یہ دوبارہ تو شروع نہیں ہورہی ہے۔

About soban

Check Also

”زندگی میں اگر خوشی چاہیے تو تین با تیں اپنے ساتھ باندھ لو او ر غم کو ہمیشہ کے لیے نکال دو۔“

اچھی کتابیں اور سچے لوگ ہر کسی کو سمجھ نہیں آتے! دنیا میں کوئی نہ …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *