خالص شہد کی پہچان۔ ابھی کر نا سیکھیں ۔د ھوکہ نہ کھا ئیں۔

آج میں آپ کو بتاؤں گا مارکیٹ سے ملنے والے مختلف کمپنیز کے پیکنگ والے شہد کی پہچان کس طرح کی جا ئے۔ شہد کے فوائد تو ہر کوئی بتا تا ہے لیکن فوائد تو تب ہی حاصل ہوں گے جب شہد خالص ہو گا۔ آپ جب بھی شہد کی بوتل مارکیٹ سے خریدیں تو ان میں لکھے ہوئے اجزائے ترکیبی ضروری پڑھ لیں اگر ان اجزائے ترکیبی میں ایڈیکٹیوز شامل ہیں تو شہد مت خریدیں کیونکہ یہ ایسے مادے ہیں جو کسی بھی لیقوڈ کی خصوصیات کو تبدیل کرنے کے لیےا ستعمال کیے جا تے ہیں اجزاء میں ہنی یا را ہنی ہی لکھا ہوا ہونا چاہیے یاد رکھیں کہ شہد شوگر فری نہیں ہو تا اگر کسی بوتل پر شوگر فری لکھا ہے تو یہ شہد خالص نہیں ہے اگر کسی بو تل کے لیبل پر یا ان اجزاء میں ہنی سیرپ یا فلیورڈ ہنی لکھا ہوا ہو تو مت خریدیں شہد کو چیک کرنے کا جو طریقہ عموماً استعمال کیا جا تا ہے

کہ وہ ایک گلاس پانی میں ایک چمچ شہد ڈالیں اگر شہد پانی میں حل ہو جا ئے تو وہ خالص نہیں ہے اگر گلاس کی تہہ میں بیٹھ جا ئے تو وہ خالص ہے دوسرا آسان طریقہ یہ ہے کہ آپ شہد کے ایک قطرے کو کسی کھر درے اور جذب کر نے والے کاغذ پر ڈالیں اگر قطرے کاغذ میں جذب ہو جا ئیں تو شہد خالص نہیں ہے ۔ آج مارکیٹ اور بازاروں میں جعلی اور دونمبر شہد کی فروخت دھڑلے سے جاری ہے،کیوں کہ ہمارے لوگوں کی اکثریت شہد کے اصلی یا نقلی ہونے کی پہچان ہی نہیں رکھتی، تو یہاں ہم آپ کو خالص شہد کی پہچان کے چند طریقے بتائے دیتے ہیں۔ سب سے پہلے شہد کی بوتل پر لگے لیبل کو چیک کریں، جس پر اجزائے ترکیبی درج ہوں۔ شہد بنانے والی کمپنی کی طرف سے ایمانداری کے ساتھ اجزائے ترکیبی کا اندراج قانونی اور اخلاقی طور پر لازم ہے۔

ان اجزاءمیں اگر ایڈیٹو یعنی ایسے مادے جو تیل میں اس لئے ملائے جاتے ہیں کہ اس میں کوئی غیرمعمولی خصوصیت پیدا ہو جائے، نہ ہو تو بے فکر ہو کر یہ شہد خرید لیں ایک گلاس میں پانی لے کر شہد سے بھرا چمچ اس میں ڈال دیں، اگر شہد خالص ہوا تو یہ پانی میں حل نہیں ہوگا، اگر خالص نہ ہوا تو حل ہو جائے گا، کیوں کہ مارکیٹ میں ملنے والے اکثر شہد گڑ سے بنائے جا رہے ہیں اس طریقہ کے ذریعے شہد کی جانچ کے لئے آپ کو ایک عدد لائٹر اور موم بتی درکار ہے۔ موم بتی میں موجود کاٹن کی بتی کو شہد میں بھگو کر ایک بار جھٹک دیں اور بعدازاں لائٹر سے اسے آگ لگانے کی کوشش کریں۔ اگر اس بتی میں آگ لگ گئی تو سمجھ لیں کہ یہ خالص شہد ہے۔ شہد کے چند قطرے جذب کرنے والے کاغذ پر پر ٹپکا دیں، اگر یہ کاغذ قطروں کو جذب کرگیا تو اس کا مطلب ہے کہ یہ شہد خالص نہیں ہے۔ اگر آپ کے پاس جذب کرنے والا کاغذ نہیں ہے تو اس کے لئے آپ سفید کپڑا بھی استعمال کر سکتے، اس کپڑے پر شہد کے چند قطرے گرا کر تھوڑی دیر انہیں دھو لیں اگر تو کپڑے پر دھبے کا نشان رہ جاتا ہے تو اس کا مطلب ہے کہ شہد خالص نہیں ہے

About soban

Check Also

”زندگی میں اگر خوشی چاہیے تو تین با تیں اپنے ساتھ باندھ لو او ر غم کو ہمیشہ کے لیے نکال دو۔“

اچھی کتابیں اور سچے لوگ ہر کسی کو سمجھ نہیں آتے! دنیا میں کوئی نہ …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *