اپنے پنکھے کو ایئرکنڈیشنر میں تبدیل کیجیے، وہ بھی گھر بیٹھے!


آس پاس چاہے کتنی ہی شدید گرمی ہو لیکن اس پنکھے سے صرف ٹھنڈی ہوا آئے گی۔ فوٹو: یوٹیوب اسکرین گریب

کراچی: فرش پر رکھے جانے والے عام پنکھے پیڈسٹل فین کو تھوڑی سی محنت کرکے ایئر کنڈیشنر میں تبدیل کرکے ٹھنڈی ہوا کھائی جاسکتی ہے۔ وہ کیسے؟ ملاحظہ کیجیے۔

شدید گرمی میں پنکھے سے آنے والی گرم ہوا کا ایک علاج ایئر کنڈیشنر لگوانا ہے، لیکن اوّل تو وہ بہت مہنگا ہوتا ہے اور دوسرے یہ کہ ایئر کنڈیشنر چلانے سے بجلی کا بِل بھی بہت زیادہ آنے لگتا ہے۔

اس مسئلے کا ایک عام اور آسان حل یہ ہے کہ پنکھے ہی کو ایئر کنڈیشنر میں تبدیل کردیا جائے۔ اس کےلیے:
سب سے پہلے کولڈ ڈرنک کی دو بوتلیں لیجیے جن میں سے ہر بوتل کی گنجائش 500 ملی لیٹر ہو ؛
دونوں بوتلوں کے پیندے اس طرح کاٹیے کہ نچلا حصہ مکمل طور پر الگ نہ ہو بلکہ ایک طرف سے جُڑا رہے جسے ڈھکنے کی طرح کھولا جاسکے؛
بوتلوں کے باقی نچلے حصے میں نصف پر چاروں جانب کاوئیے سولڈرنگ آئرن یا کسی گرم سلاخ سے گول سوراخ کردیجیے؛
بوتلوں کے ڈھکنے مضبوطی سے بند کرکے انہیں اُلٹا کیجیے اور باریک تار کی مدد سے پیڈسٹل فین کے پیچھے والی جالی پر باندھ دیجیے؛
اب فریزر میں جمائی گئی برف کے چھوٹے چھوٹے ٹکڑے (آئس کیوبز) لے کر ان سے بوتلوں کو آدھا بھر دیجیے۔
یہ کارروائی مکمل کرنے کے بعد پیڈسٹل فین چلا دیجیے اور اس کے سامنے بیٹھ کر ایئر کنڈیشنر جیسی ٹھنڈی ہوا کا لطف لیجیے۔
اگر تحریری طور پر یہ بات سمجھ میں نہ آئی ہو تو ساری تفصیل اس ویڈیو میں دیکھ لیجیے:

آس پاس کتنی ہی شدید گرمی کیوں نہ ہو، لیکن آپ محسوس کریں گے کہ پنکھے سے آنے والی ہوا بہت ٹھنڈی ہوگئی ہے۔

اگر آپ کے پاس بڑا پیڈسٹل فین ہے تو 500 ملی لیٹر کے بجائے ایک لیٹر والی کولڈ ڈرنک بوتل استعمال کرنا زیادہ مناسب رہے گا۔

کچھ دیر بعد جب برف پگھل جائے اور پنکھے کی ہوا گرم ہونے لگے تو اُلٹی بوتلوں کے ڈھکنے کھول کر سارا پانی نکال لیجیے اور ان میں دوبارہ سے نئی برف بھر دیجیے۔

About soban

Check Also

”زندگی میں اگر خوشی چاہیے تو تین با تیں اپنے ساتھ باندھ لو او ر غم کو ہمیشہ کے لیے نکال دو۔“

اچھی کتابیں اور سچے لوگ ہر کسی کو سمجھ نہیں آتے! دنیا میں کوئی نہ …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *