سعودی شہزادے کا اچانک انتقال

سعودی عرب میں فروری کا مہینہ شاہی خاندان پر بہت بھاری ثابت ہوا تھا۔ اس ماہ کے دوران متعدد سعودی شہزادیاں اور شہزادے دُنیا سے رخصت ہو گئے تھے۔اس ماہ کے دوران چھ سے زائد شہزادے اور شہزادیاں انتقال کر گئے تھے۔جس کے بعد مارچ میں بھی کئی صدمے سہنا

پڑے۔ ابھی پچھلی اموات کا صدمہ کم نہ ہو پایا تھا کہ ایک اورشہزادہ انتقال کر گیا ہے۔سعودی ایوان شاہی کے مطابق شاہی خاندان کے معروف شہزادے بندر بن فیصل بن سعود بن عبدالرحمن ال سعود گزشتہ روز انتقال کر گئے ہیں۔ ان کی نماز جنازہ آج سوموار کو ادا کرنے کے بعد ریاض شہر میں تدفین کر دی گئی ہے۔ایوان شاہی کی جانب سے مرحوم شہزادے کی مغفرت اور بلند درجات کے لیے دُعا بھی کی

گئی ہے۔مرحوم شہزادہ بندر بن فیصل سعودی مملکت کے بانی شاہ عبدالعزیز کے نواسے تھے۔ان کے پسماندگان میں 13 بیٹے اور

بیٹیاں شامل ہیں۔ شہزادہ بندر کے ایک بیٹے شہزادہ سعود بن بندر معروف شاعر بھی ہیں۔ واضح رہے کہ گزشتہ ماہ شہزادہ بندر بن ذعار بن ترکی بن عبدالعزیز گزشتہ روز انتقال کر گئے ہیں۔ ماہ فروری کے آخری ہفتے میں شہزادہ فہد بن محمدبن عبدالعزیز السعود بن فیصل السعود انتقال کر گئے تھے۔ جن کی نماز جنازہ ریاض شہر میں ادا کرنے کے بعد ان کی تدفین کی کی گئی تھی۔ان کے انتقال سے چند روز قبل شاہی خاندان کی معروف شخصیت شہزادی لمیا بنت ھذلول بن عبدالعزیز آل سعود انتقال فرما گئی تھیں۔شہزادہ عبدالرحمان المساعد نے بھی اپنے ٹویٹر اکاؤنٹ پر شہزادی ھذلول کی وفات کی اطلاع پردیتے ہوئے بتایا تھی کہ مرحوم شہزادی ان کی چچا زاد بہن اورسالی بھی تھیں۔شہزادی لمیا کے والد شہزادہ ھذلول بن عبدالعزیز بانی مملکت کے 32 ویں بیٹے تھے۔

About soban

Check Also

”زندگی میں اگر خوشی چاہیے تو تین با تیں اپنے ساتھ باندھ لو او ر غم کو ہمیشہ کے لیے نکال دو۔“

اچھی کتابیں اور سچے لوگ ہر کسی کو سمجھ نہیں آتے! دنیا میں کوئی نہ …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *