رواں سال فدیے اور فطرانے کی رقم کتنی ہے علماء نے رقم میں بڑی تبدیلی کردی جانیں

رویت ہلال کمیٹی کے سابق چیئرمین مفتی منیب الرحمان نے فطرانے اور فدیے کے نصاب کا اعلان کر دیا۔ مفتی منیب الرحمان کے مطابق فطرانے اور فدیے کی کم ازکم رقم 140روپے فی کس ہے، جو کے نصاب سے 320، کھجور کے نصاب سے 960 اور کشمش کے نصاب سے فطرانہ و فدیہ 1920روپے بنتا ہے۔ اہل

ثروت اپنے مالی معیار کے مطابق فطرانہ اور فدیہ اداکریں۔دوسری طرف جماعت اہلحدیث پاکستان کے دارالافتاء کے انچارج مفتی حافظ عبدالوھاب روپڑی نے کہا ہے کہ قرآن و حدیث کے مطابق اس سال صدقۃالفطر گندم کا آٹا استعمال کرنے والے 195روپے اور چاول کا استعمال کرنے والے375روپے ادا کریں۔اپنے جاری کردہ فتوے میں انہوں نے احادیث کو کوڈ کرتے ہوئے کہا کہ نبی کریمﷺ اور صحابہ کرامؓ نے جس پیمانہ

(صاع) سے صدقۃ الفطراداکیااس کاوزن دوسیردس چھٹانک تین تولہ چار ماشہ تقریباً پونے تین سیرہے جبکہ رائج الوقت پیمانہ اڑھائی کلوفی کس ہوگاجسے جنس کی صورت میں بھی ادا کیاجاسکتاہےلیکن اگر کوئی جنس کی بجائے قیمت ادا کرنا چاہے تو وہ اس کی ادائیگی اس طرح کرے کہ گندم کاآٹااستعمال کرنے والے 195 روپے اورچاول استعمال کرنے والے 375روپےاور دونوں (آٹا اورچاول) چیزیں ملاکراستعمال کرنے والے285روپے فی کس ادا کریں۔صدقہ فطرنمازعید سے پہلے اداکرناضروری ہے کیونکہ نمازعیدکے بعداس کی ادائیگی درست نہیں ہوگی۔صدقہ فطر ہر فرد کی طرف سے ادا کرنا ضروری ہے حتیٰ کہ جو بچہ عیدسے پہلے پیداہواس کاصدقہ بھی ادا کرنا چاہیے۔

About soban

Check Also

”زندگی میں اگر خوشی چاہیے تو تین با تیں اپنے ساتھ باندھ لو او ر غم کو ہمیشہ کے لیے نکال دو۔“

اچھی کتابیں اور سچے لوگ ہر کسی کو سمجھ نہیں آتے! دنیا میں کوئی نہ …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *