افطاری میں زیادہ پانی پینے والے خبردار ہوجائیں

اللہ رب العز ت سا رے جہا نوں کا پیدا فر ما نے والا ہے اور وہی تمام مخلوق کا پالن ہار ہے۔ جتنے جاندار ہیں سب کی روزی اللہ رب العز ت نے ا پنے فضل وکرم سے اپنے ذمۂ کرم پر لیا ہے اور وہ سب کی ضرورت کے مطا بق نعمتیں عطا فر ما تا ہے ۔کڑو رہا نعمتیں ہیںجو اس نے اپنی مخلوق کو عطا کی ہیں اور اعلان فر ما یا۔اگر اللہ کی نعمتیں گنوتو انھیں شمار نہ کر سکو گے۔

بے شک اللہ بڑا بخشنے والا مہربان ہے( النحل18)۔ اور جو بھی نعمتیں تمھیں حاصل ہیں سو وہ اللہ ہی کی جا نب سے ہیں( النحل 53)۔ رمضان کا مہینہ اور گرمی بھی ہوتی ہے اکثر اوقات کام بھی کرنا ہوتا لیکن اس پر اجر بھی بہت ہے ۔ ہم یہ سب کچھ اللہ تعالیٰ کی رضا کیلئے کررہے ہوتے ہیں ۔افطاری سے پہلے ہمیں شدت کیساتھ انتظار ہوتا ہے کہ اللہ تعالیٰ کے کرے وقت جلدی گزر ہوجائے سب روزہ داروں کو افطاری کا انتظار ہوتا ہے اور اسی انتظار میں جب افطاری کا وقت ہوتا ہے لوگ افطاری کرنا شروع کرتے ہیں کھجور لیتے ہیں یا کوئی اور چیز لیتے ہیں تو اس وقت پیاس کی اتنی شدت ہوتی ہے اتنی پیاس لگی ہوتی ہے کہ انسان کہتا ہے کہ پوری دنیا کو پی لے ۔لیکن آخرانسان کا پیٹ ہے اس میں کتنا کچھ آئیگا تو اکثر لوگ کیا کرتے ہیں کہ افطاری کے وقت گلاس پکڑتے ہیں اور پانی پینا شروع کردیتے ہیں

اتنا زیادہ پانی پیتے ہیں کہ پیٹ میں اور چیزوں کی گنجائش نہیں رہتی ۔ پیٹ بھر جاتا ہے اور انسان کیلئے چلنا مشکل اٹھنا مشکل ہر کام مشکل بن جاتا ہے ۔ اس بارے میں آپﷺ کا فرمان مبارک ہے مسلم کی روایت ہے حضرت انس ؓ فرماتے ہیں کہ رسول پاک ﷺ پانی پینے کے دوران تین سانس لیا کرتے تھے ۔سب سے پہلی بات یہ یاد رکھیں تین سانسوں میں پانی پئیں اور آپﷺ یہ فرماتے کہ ایسا کرنے سے آدمی خوب بھر جاتا ہے ۔پیاس بھی انسان کی خوب بجھ جاتی ہے ۔ اس کے علاوہ آپﷺ نے فرمایا کہ ایسا کرنے سے بیماری سے تندرستی ہوتی ہے اور پانی اچھی طرح ہضم ہوجاتا ہے ۔ آپﷺ کا فرمان دیکھ لیں کہ سب سے پہلے پانی پئیں تو تین سانسوں کا خیال رکھیں تھوڑا سا پانی پئیں ایک سانس لیں پھر تھوڑا سا پانی پئیں پھر دوسرا سانس لیں اور اس کے بعد جتنا پانی پینا ہے پی لیں اور تیسرا سانس لیں ۔

کتنے فائدے بتائے کہ پیٹ بھی بھر جائیگا اور تمہاری پیاس بجھ جائیگی ۔ پیاس ہی تو بجھانی ہے لیکن اس کے ساتھ کیا ہوگا بیماریوں سے شفاء ملے گی ۔ اگر ہم سنتوں کا اہتمام کریں تو ہم کئی بیماریوں سے بچ سکتے ہیں اور یہ بھی فرمایا کہ پانی اچھی طرح ہضم ہوجائیگا کیونکہ انسان کا معدہ جتنا اچھا ہوگا اتنی ہی بیماریاں کم لگیں گے ۔ رمضان میں افطاری کے وقت پانی پئیں تو ان باتوں کا خیال رکھیں تین سانسوں میں پئیں جلدی نہ کریں ۔ وہ صرف آنکھوں کی بھوک ہے انسان ایک دو تین گلاس پیتا ہے تو پیٹ بھر جاتا ہے ۔ پیٹ کے اندر پانی اتنا زیادہ ہوجاتا ہے کہ برداشت نہیں ہوتا تو افطاری میں اس بات کا خیال رکھیں کہ پانی آہستہ پئیں اور تین سانسوں میں پئیں اس سے آپ کی پیاس خوب بجھے گی اور زیادہ پانی پینے کی ضرورت بھی نہیں پڑے گی ۔

About soban

Check Also

دانتوں میں خول اور کیڑا لگ جانے کا دیسی علاج

دانتوں میں خول اور کیڑا لگ جانے کا علاج کے لیے آپ کوآسان گھریلو نسخہ …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *