ںا جائز فلمیں دیکھنے کے نقصانات

پ ورن و گرافی اس کو کہتے ہیں جیسا کہ عام طور پر ہمارے بچوں اور بڑوں کا انفارمیشن حاصل کرنے کا جو ذریعہ ہے وہ انٹرنیٹ ہے۔ ہم میں سے یہ کوئی کوشش نہیں کرتا ہے کہ رائٹس پرسن کے پاس جائیں اور معلومات حاصل کر سکیں۔ اس طرح کے جتنے بھی لوگ ہیں۔ وہ سیکھنے کی کو شش کرتے ہیں اگر کوشش نہ بھی کریں تو جو پ ورن وگرافی سے معلومات حاصل کرتے ہیں۔ حتی ٰ ایک سروے میں بھی آیا ہے کہ پ ورونوگرافی پاکستان میں سب سے زیادہ دیکھی جاتی ہے۔

تو اس طرح کی چیزیں جو ہمارا میڈیا ہے وہ ہمارا ذہن کو بناتاہے۔ ہمارے سوچنے کا پیٹر ن اسی طرح سے ایفیکٹ ہوناشروع ہوجاتاہے۔ تو ایسے بہت سے لوگ جو پ ورونوگرافی کو دیکھ دیکھ کر ان کے رویہ کےاندر متھ جیسے رویے پیدا ہوجاتے ہیں۔ اسی طرح کی پریکٹسیز بھی بہت زیادہ ہوجاتی ہیں۔ جو کچھ پ ورونوگرافی میں دیکھا ہے جو وہاں سے مشاہدہ کیا ہے۔ وہ خو د کے ساتھ کرنے کی کوشش کرتے ہیں۔ جس کا نقصان ان کو اٹھاناپڑتا ہے ۔ جیسا کہ آپ کی جو فی میل ہے

جو آپ کی بیوی ہے ایک تو اس کا ایکسپوژر وہ نہیں ہے۔ دوسرا جو آپ بہت سارے وقتوں میں اتنی ساری چیزوں سے نکلتے ہیں آپ ایک نارمل ج نس سے نکل آتے ہیں۔ نارمل ج نس میں آپ تھوڑا سا پیچھے جائیں تو پہلے جتنی بھی چیزیں تھیں۔ یعنی ایک عام خیال ہے۔ جس کے اوپر لوگ ایک رشتہ بھی بناتے تھے ۔ اور میاں بیوی کا تعلق بھی بنتا تھا۔ لیکن جیسے جیسے ہم مختلف چیزوں سے ایکسپوژر ہوناشروع ہوگئے ہیں۔ تویہ چیز یں پیچیدہ ہونا شروع ہوگئیں ہیں۔ لوگوں کی پریکٹسیز بہت زیادہ بدلنا شروع ہوگئیں ہیں۔ لوگوں کی دلچسپی میں تبدیلی آنے لگی ہے۔ لوگوں کی ج نس ی پریکٹسیز میں تبدیلی آنے لگی ہے۔

مختلف طریقو ں سے اپنے پارٹنر سے خود کا انجوائے کرنا شروع ہوگئے ہیں۔ جس کی ایک وجہ تو یہ ہے جیسا کہ کہا ہے کہ آپ کا پارٹنر تیا رنہیں ہوتا۔ ہوسکتاہے وہ اس سٹیج پر نہ ہووہ اس طرح سے نہ سمجھ رہا ہو جس طریقے سے آپ توقع رکھ رہے ہو۔ یعنی جیسا اس نے اپنے دماغ میں خیال بنایاہو وہ ویسا نہ ہو۔ تو اس کو ویسا لطف نہیں ہوسکتا۔ اسی طرح ہوسکتاہے اس کے پارٹنر کے ساتھ تعلقات خراب ہوجائیں۔ آپ نے بہت ساری پ ورونوگرافی دیکھی ہو ئی ہے

تو وہ آپ کے دماغ میں ویسے تصور کررہی ہوتی ہیں۔ مگر آپ کے پارٹنر ، بیوی یا آپ کے شوہر نے وہ چیزیں نہ دیکھی ہوئی ہوں۔ وہ اس طرح سے کشش نہ کرتی ہوں۔ تو پھر تعلقات میں بہت خراب ہونے کے چانسز ہوتے ہیں۔ اکثر یہ بھی دیکھنے میں آیا ہے کہ جو لوگ بہت زیادہ پ ورون وگرافی دیکھتے ہیں ان میں یہ ج نس ی لطف کئی دفعہ ختم ہوجاتی ہے۔ ان کو محسو س بھی نہیں ہورہا ہوتا ہے۔ جس کو ان ہیبی شن کہتے ہیں تو ان کا دل بھی نہیں کررہا ہوتا ہے ۔ جتنازیادہ انسان ایکسپوژر میں جاتا رہتا ہےہرچیز کو اپنے لیے سمجھتا ہے۔ کہ یہ چیز میرے لیے ہے میں بھی اس کی کوشش کروں۔ کوشش کی جاسکتی ہے ۔لیکن ایک حدود تک اپنے پارٹنر کے ساتھ کرسکتے ہیں۔ کئی دفعہ دیکھا ہے کہ یہ لوگوں کی فزیکل اور دماغی حالت دونوں کو ہی خراب کررہی ہوتی ہے۔ اس کے لیے بہتر ہے ایک نارمل طریقے کار کو اپنائیں۔ تاکہ ان کی زندگی پوزیٹولی گروتھ کرسکے۔

About soban

Check Also

”زندگی میں اگر خوشی چاہیے تو تین با تیں اپنے ساتھ باندھ لو او ر غم کو ہمیشہ کے لیے نکال دو۔“

اچھی کتابیں اور سچے لوگ ہر کسی کو سمجھ نہیں آتے! دنیا میں کوئی نہ …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *