تین چیزیں کبھی زندگی میں نہ کریں کسی انسان سے بات کرنے کی التجا کسی کو اپنی طرف متوجہ کرنے کے لیے کبھی کسی سے اپنی زندگی میں رکے رہنے

کسی بھی اتنی اہمیت نہ دیں کہ کل کو اگر وہ میسر نہیں تو آپ کی زندگی ادھوری رہ جائے ۔ وہ خسارہ ہمیشہ یاد رہتا ہے جو کسی کے ساتھ مخلص ہو کر کھایا ہو۔ شادیوں پر کھانا نہیں کھلتا بلکہ بندے کھول دئیے جاتے نہیں کھانا تو اپنی جگہ ہی رہتاہے ۔ دھوکہ لوگ نہیں دیتے ، دھوکہ ہم کھاتے ہیں ، ہمارا یقین ہمارا اعتبار ہمارا اعتماد ۔ اور سب سے بڑھ کر ہماری توقعات ہمیں دھوکہ دے جاتی ہیں۔ زندگی میں اتنے کامیاب ضرور بن جاؤ کہ تمہیں ردکرنے والے جب کبھی اچانک تمہیں دیکھیں تو پچھتائیں تمہیں کھونے پر۔ دل اور نصیب اپنی مرضی کرتے ہیں ۔ عقل کی چابی دونوں کو نہیں لگتی ۔ جو عورت اپنے بننے سنورنے اور آسائشوں کے لیے تمہیں رزق حرام پر مجبور کرے ۔

جس سے تمہاری دنیا اور آخرت تباہ ہو ۔ اس سے بہترہے وہ عورت جو پانچ وقت وضو کے پانی سے اپنا چہرہ دھوئے ۔ اور تمہارے لیے حلا ل رزق اور آخرت کی دعا کرے۔ تین چیزیں کبھی زندگی میں نہ کریں۔ کبھی کسی سے اپنی زندگی میں رکے رہنے کی بھیک نہ مانگیں کہ جسے رشتوں کا مان ہوتا ہے وہ حالات پیدا ہی نہیں ہونے دیتا۔ کسی انسان سے بات کرنے کی التجاء نہ کریں کہ جسے احساس ہوگا وہ بنا بات کرے تمہارے حالات جان جائے گا۔ کسی کو اپنی طرف متوجہ کرنے کے لیے خود کو رسوا نہ کریں کہ جس کو آپ کا دکھ چہرے سے نہیں دکھائی دیتا ۔

وہ بتائے جانے پر بھی کچھ نہیں کرسکتا۔ میں نے کہیں پڑھا کہ جب بے سبب دل پریشان ہو تو دوسروں کی مدد کیا کرو۔ مجھے لگتا ہے اچھے الفاظ مدد کا سب سے آسان ذریعہ ہیں، انسانوں کی نذر خوبصورت الفاظ کیا کیجیے ایسے الفاظ جوان میں امید جگا سکیں۔ ان کا حوصلہ بڑھا سکیں۔ کسی کی غلطیوں کو بے نقاب نہ کرو خدا بیٹھا ہے تم حساب نہ کرو۔

رشتوں کے بدلنے کا کیاروناوقت تو آپ کی اپنی شکل تک بدل دیتاہے۔ عزت نہایت قیمتی چیز ہے کسی اختلافی بحث کے دوران آپ کی عزت پر انگلی اٹھانے والا بعد میں سونے کا بھی بن کر آجائے تو اس ےفری میں بھی نہیں لینا چاہیے۔ ہمارے معاشرے کی بے حسی یہ ہے کہ حسب نسب والی ، پاکدامن اور پاکیزہ لڑکیاں گھروں میں بیٹھی بیٹھی بوڑھی ہوجاتی ہیں۔

اور بے حس رشتے دار خود غرضی کے تحت رشتہ تلا ش کرنے میں مدد نہیں کرتے ۔ یادرکھو!انہیں لڑکیوں سے اچھی نسل پیدا ہوتی ہے۔ اور دوسری طر ف بے دینی ، آوارہ ، بدچلن اور زا ن ی عورتیں سڑکوں اور بازاروں میں ، جو دولت والا قابو آجائے ۔ اس س ےشادی کر لیتی ہیں۔ اور اس قسم کی گن دی عورتوں سے گن دی اولادیں ہی جنم لیتی ہیں۔

About soban

Check Also

سلطان علاؤ الدین کی تلوار اندھی اورجلاد کی طرح ہاتھ ۔۔۔۔؟؟؟

دلچسپ و عجیب سلطان علاؤ الدین کی تلوار اندھی تھی اور ہر وقت جلاد کے …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *